انتہا پسندانہ افکار کے سدباب کے لئے صوفی طرز عمل ہی واحد راستہ: مولانا ساجد حسین مصباحی Sufism Combat Extremist Thoughts

By Word for Peace Special Correspondent

 

دنیا میں مذہب کے نام سے بڑھتے ہوئے متشدد، انتہا پسندانہ  عدم روادارانہ اوردہشت گردانہ افکار کے سدباب کے لئے صوفی طرز عمل ہی واحد راستہ ہے-آل انڈیا علماء ومشائخ بورڈ تقریباً ایک دہائی سے صوفیا کے اسی پیغام کوعام کرنے میں کوشاں ہے۔

ان خیالات کا اظہارمدرسہ تہذیب الاسلام، سری پور، بردوان میں علماء وعہدیداروں کی میٹنگ سے  خطاب کرتے ہوئے مولانا ساجد حسین مصباحی صدربردوان نے کیا۔ مولانا نے اپنے خطاب میں لوگوں کوآل انڈیا علماء ومشائخ بورڈ کے زیر اہتمام ورلڈصوفی فورم کے تحت ہونے والے انٹرنیشنل صوفی کانفرنس کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ اسی کوشش میں 20 مارچ2016 کورام لیلا میدان صبح 09:00 بجے سے شام 04:00 بجے تک ایک انٹرنیشنل صوفی کانفرنس منعقد کررہا ہے۔

اس کانفرنس میں ہندوستان کی جملہ ریاستوں کے علماء، مشائخ،ائمہ، مدرسین اور دانشور طبقہ کی نمائندگی ہوگی۔ اس کے علاوہ ہندوستان کے باہر کے تقریبا 40علماء،مشائخ اور دانشوربنگلہ دیش، سری لنکا،سنگاپور، ملیشیا، چین، ترکی،کناڈا، سیریا، عرب،افریقہ،آسٹریلیا،امریکہ برطانیہ وغیرہ ممالک سے تشریف لائیں گے۔ دنیا کی ممتاز یونیورسٹی الازہر،آکسفورڈ،کیلیفورنیا، ہارورڈ، کیمبرج اور کناڈا یونیورسٹی کے پروفیسرس بھی موجود ہوں گے تا کہ ایک ساتھ بیٹھ کر موجودہ حالات کے مختلف پہلوؤں پر غور کر کے ایک مضبوط لائحہ عمل تیار کر سکیں۔

 میٹنگ کی شروعات تلاوت قرآن کریم سے ہوئی اورمیٹنگ کا اختتام صلوٰۃ وسلام پر ہوا۔ میٹنگ میں حافظ صابر،محمدسلیم اشرفی،حافظ تطہیر،شاہد اشرف،محمدشاہد،علی امام انصاری،محمدشہاب الدین،محمدازہرالدین،اعجاز انصاری کے علاوہ کثیر تعداد میں لوگ موجود رہے

Check Also

अजमेर दिल्ली सहित सभी दरगाहों पर याद किये गए आज़ादी के परवाने

By WordForPeace Correspondent नई दिल्ली :14 अगस्त दरगाह हज़रत निज़ामुद्दीन स्थित ग़ालिब अकादमी में आल …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *