پیغمبر اسلام کی پوری زندگی امن وعافیت سے عبارت ہے

Report by Word for Peace
لکھنؤ۔27دسمبر

رسول کی ولادت سے پہلے دنیا کی تاریخ دیکھئے توپتہ چلتاہے کہ ہرطرف بے راہ روی اورمطلق العنانی کا بول بالا تھا۔تفاخر ونسل پرستی اپنے عروج پر تھی۔مردوں کی زندگیاں اورعورتوں کی عزت کچھ بھی محفوظ نہیں تھا۔لڑکی کی پیدائش قابل شرم سمجھاجاتاتھااورپیداہوتے ہی اسے زندہ دفن کردیا جاتاتھا۔خونریزی اوربربریت کایہ عالم تھا کہ داداپردادا کے قتل کا بدلہ پوتاپرپوتا لیتاتھا۔عورتیں بازاروں میں کسی سامان عیش وعشرت کی طرح خریدی اوربیچی جاتی تھیں اورجب وہ داد عیش دینے کی قابل نہ رہ جاتیں توکسی بیکا رسامان کی طرح بے یارومددگار چھوڑدیاجاتاتھا۔غرض یہ کہ پوری انسانیت سسک رہی تھی،پورامعاشرہ بے راہ روی کا شکارتھا۔ایسے پرآشوب ماحول میں پیغمبر اسلام کی ولادت پوری دنیائے انسانیت کے لئے رحمت ثابت ہوئی اورآپ کی داعیانہ صلاحیتوں اورشبانہ روز کی کوششوں نے پورے معاشرہ کویکسر تبدیل کرکے رکھ دیا۔بچیاں محفوظ ہوگئیں،عورتوں کے ساتھ کھلواڑ بندہوگیا،پشتوں کی عداوتیں بالکل ختم ہوگئیں۔لوگ ایک دوسرے کے ہمدرداورمحبت واخوت کے دلدادہ بن گئے۔پیغمبر اسلام کی انسانیت نواز اوراخلاقی تعلیمات سے پورامعاشرہ امن وامان کا گہوارہ بن گیا۔آج بھی اگر پیغمبر اسلام کی سیرت کواپنالیاجائے اورآپ کی اخلاقی تعلیمات کوعام کردیاجائے اورہرشخص رسول کے اسوۂ حسنہ پرعمل پیراہوجائے تو پوری دنیا ایک بارپھر امن وامان کا گہوارہ بن سکتی ہے۔

ان خیالات کا اظہار عید میلاد النبی کی محفل کو خطاب کرتے ہوئے مولانا ابوالعاص حسن مصباحی نے کیا- آل انڈیا علماء ومشائخ بورڈ کے صوبائی دفتر میں محفل عیدمیلا دالنبی کا اہتمام کیا گیا۔لکھنؤ یونٹ کے زیر اہتمام اس محفل کی صدارت سید حماد اشرف (جنرل سکریٹری اترپردیش) کررہے تھے۔

مولانا نے مزید کہا کہ رسول پاک کی پوری زندگی امن وعافیت سے تعبیر ہے۔آپ کی سیرت کا مطالعہ اوراس پرعمل سے پوری انسانیت کوپرامن بناسکتاہے۔آج جبکہ پوری دنیا ایک اضطرابی کیفیت سے دوچارہے ہر طرف دہشت گردی اوربدامنی کا دوردورہ ہے اوردنیا کوامن وامان کا گہوارہ بنانے کی تمام کوششیں ناکام ہوچکی ہیں ایسے وقت میں رسول اللہ کی سیرت طیبہ اورآپ کی پرامن تعلیمات کی ضرورت وافادیت اوربڑھ گئی ہے۔


محفل کا آغاز قاری محمدعرفان کی تلاوت سے ہوا،سید حماد اشرف نے حاضرین کا شکریہ اداکیا اورمحفل کا اختتام صلوٰۃ وسلام اوردعاپرہوا۔ محفل میں نیر اعظم،ابوبکر،رمضان علی،عثمان علی، رؤف احمد،ہمراز علی موجود رہے۔

Check Also

How An Act Of Kindness By An Indian-Origin Muslim Helped A Man To Become Top Jurist In South Africa

An Indian-origin shopkeeper based in South Africa became an overnight sensation after the new deputy …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *