Muslims Must Exhibit Love, Peace And Harmony Specially in Rabiul Awwal: Syed Mohammad Ashraf

ماہ ربیع النور میں مسلمان امن، محبت اور اخلاص کا خاص مظاہرہ کریں: سید محمد اشرف

By Word for Peace Special Correspondent

 

مریضوں کی عیادت، شجرکاری ، قیدیوں کا خیال ،یتیموں اور بے واؤں کی طرف توجہ ضروری

یوں تو مذہب اسلام مکمل طور پر انسان کی خدمت کی تر غیب و تلقین کرتا ہے لیکن ماہ ربیع النور کا چاند نظر آتے ہی مسلمانوں میں خدمت خلق کا جذبہ مزید بڑھ جاتا ہے ۔ روزانہ محافل اور جلسے منقد کر کے جہاں ایک طرف ہم پیغمبر اسلام کی عظمتوں کا ذکر کرتے ہیں وہیں دوسری طرف ان کی انسان دوستی اور خدمت خلق کا تذکرہ کر کے ہم اپنی زندگی میں اس عمل کو داخل کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔اس ماہ مبارک کی ۱۲ تاریخ کو پوری دنیا میں امن و محبت کا جلو س بڑے اہتمام اور انتظام سے نکلتا ہے ۔اس 1917080_522323851269620_1715849226758182915_nدن خصوصی طور پر بیماروں کی تیمارداری، یتیموں کے سر پر ہاتھ رکھنے اور بے واؤں کو سہارا دینے کی ضرورت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار گذشتہ شب معافی درگاہ نبی کریم قدم رسول سرائے بودلہ آگرہ میں منعقد جلسے عید میلاد النبی کو خطاب کرتے ہوئے آل انڈیا علماء و مشائخ بورڈ کے صدرو بانی سید محمد اشرف کچھوچھوی نے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ جب ہم جلوس میں نکلیں تو راستے میں پڑنے والے ہر اسپتال تک پہنچے اور مریضوں کو کم از کم ایک سیب ضرور تقسیم کریں اور بلا تفریق مذہب ملت اس سے کہیں کہ یہ پھل اور تیمار داری اس ذات کی آمد کی خوشی میں ہے جو ہمار بھی نبی ہے اور تمہاری بھی نبی ہے ۔ اس دن درخت بھی لگانے کا اہتمام کیا جائے اور اگر ممکن ہوتو قیدوں تک بھی رسائی حاصل کی جائے تاکہ ان کا بھی خیال رکھا جا سکے ۔جلوس کے دوران کسی بھی طرح کی دسپلن شکنی کا مظاہر ہ نہ کیا جائے ۔درود کا ورد کرے ہوئے جلوس میں شامل ہوں اور اگر نماز کا وقت ہوجائے تو خدا کی بارگاہ میں سجدے کر کے آگے بڑھیں۔نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج اسلام کو صحیح طریقے سے پیش کرنے کی ضروت ہے ۔ اسلام اصلاح کیلئے آیا ہے تنقید کیلئے نہیں۔۱۲ ربیع الاول کا جلوس پوری دنیا میں امن چاہنے والے نکالتے ہیں اور امن کا پیغام دیتے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ مسلم ممالک کے ساتھ ان ممالک میں بھی جلوس بڑے اہتمام کے ساتھ نکالا جاتا ہے جہاں اسلامی حکومت نہیں ہے ۔در اصل یہ عالمی یوم امن ہے ۔جلسے کی صدارت مولانا مدثر خان نے کی ۔نظامت کے فرائض مولانا غلام جابر رضانے انجام دئے ۔جلسہ شیخ محمد شفیق کی سرپرستی میں منعقد ہوا ۔جلسے کو مفتی وسیم اشرفی، مولانا مسرور رضا قادری، مولانا محمد علی ،جوہر شفیقی مظفر پوری، سید محمد علی شفیقی،قاری مشاہد رضا،مولانا مطلوب حسین،قاری حنیف قادری سنبھلی،حاجی محمد عمران اشرفی نے بھی خطاب کیا ۔ علاقہ کے علماء ائمہ عوام و خواص کے علاوہ قاری نواب اقبال ، مولانا دلکش جالونوی،مولانا احمد رضا،مولانا سجاد عالم ، مولانا ارشد الرحمن پیرزادہ شیخ محمد عامر قادری نے خصوصی طور پر شرکت کی ۔ جلسے کااختتام صلوٰہ و سلام اور دعا

Check Also

How An Act Of Kindness By An Indian-Origin Muslim Helped A Man To Become Top Jurist In South Africa

An Indian-origin shopkeeper based in South Africa became an overnight sensation after the new deputy …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *